7

پی ڈی ایم آج کوئٹہ میں اپنا تیسرا حکومت مخالف جلسہ منعقد کرے گی

حکومت کی طرف سے ایک انتباہ کے باوجود پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) آج شہر میں اپنا تیسرا حکومت مخالف جلسہ منعقد کرے گی۔

عوامی اجتماع کوئٹہ کے ایوب اسٹیڈیم میں ہوگا۔ جے ڈی آئی کے سربراہ مولانا فضل الرحمن اور مسلم لیگ (ن) کے نائب صدر مریم نواز سمیت پی ڈی ایم رہنما آج کے جلسے میں حصہ لینے کے لئے پہلے ہی شہر پہنچ چکے ہیں۔

پی ڈی ایم جلسہ منتظمین کا کہنا تھا کہ جلسے کے لئے سیکیورٹی کے انتظامات موجود ہیں۔ ڈی جی اظہار اکرام نے بتایا کہ دہشت گردی کے خطرے کی روشنی میں حفاظتی اقدامات کے مناسب اقدامات اٹھائے گئے ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ صوبائی حکومت کو سرحد پار سے یہ معلومات فراہم کی گئیں کہ جلسے کے دوران ہونے والے ایک دہشت گرد حملے کا خطرہ موجود ہے۔

نیشنل کاؤنٹر ٹیررازم اتھارٹی (این اے سی ٹی اے) ، جو وفاقی وزیر داخلہ کے ماتحت کام کر رہی ہے ، نے کچھ دن پہلے ہی الرٹ جاری کیا تھا۔

ذرائع نے بتایا ہے کہ حکام کی جانب سے دہشت گرد حملے کے امکان کے بارے میں معلومات کو سنجیدگی سے لیا جارہا ہے۔ اس کے نتیجے میں ، یہ یقینی بنانے کے لئے کہ آج جلسے کے دوران کوئی ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آئے ، حکومت بلوچستان نے اضافی پولیس فورس تعینات کردی ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس طرح کی دھمکیاں کوئی نئی بات نہیں تھیں اور ماضی میں بھی صوبائی حکومت نے انہیں سنجیدگی سے لیا تھا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ دھمکی ان گروہوں کی طرف سے موصول ہوئی ہے جن کے ہندوستان کی خفیہ ایجنسی را کے ساتھ تعلقات ہیں۔

ذرائع نے بتایا کہ PDM جلسے کے منتظمین مقامی انتظامیہ سے مستقل رابطے میں ہیں اور جلسہ عام اور اس کے آس پاس کے سیکیورٹی کی صورتحال کو برقرار رکھنے میں تعاون بڑھا رہے ہیں۔

.

Hrif News Logo

0Shares

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں